کمشنر ساہیوال کی زیرصدارت سرکاری تعلیمی اداروں کی کارکردگی کا جائزہ اجلاس

 کمشنر ساہیوال کی زیرصدارت سرکاری تعلیمی اداروں کی کارکردگی کا جائزہ اجلاس

ساہیوال (ساہیوال نیوز – 30 جنوری 2020) کمشنر ساہیوال ڈویژن محمد احسن وحید نے کہا ہے کہ نوجوان نسل کی تربیت اساتذہ کا دینی و ملی فرض ہے اور انہیں اپنی تمام توانائیاں اس مقدس فرض کی ادائیگی کے لئے وقف کرنی چاہیے تا کہ پاکستان کا مستقبل محفوظ ہاتھوں میں رہے.

اساتذہ ہی طلبا و طالبات کے رول ماڈل ہوتے ہیں اس لئے اعلی اخلاقی اقدار اساتذہ کی زندگی کا لازمی جزو ہونی چاہیے، وہ یہاں اپنے دفتر میں ساہیوال ڈویڑن میں سرکاری تعلیمی اداروں کی کارکردگی کا جائزہ لینے کے لئے ہونے والے اجلاس کی صدارت کر رہے تھے جس میں ایڈیشنل کمشنر کوآرڈینیشن ایس ڈی خالد، ڈائریکٹر سکینڈری ایجوکیشن اور سی ای او ساہیوال، ڈائریکٹر ایلمنٹری ایجوکیشن راشد لطیف، سی ای او اوکاڑہ سہیل اظہر، سی ای او پاکپتن راجہ محمد طارق اور اسسٹنٹ ڈائریکٹر محمد سلیم نے بھی شرکت کی –

انہو ں نے محکمہ تعلیم کے فیلڈ افسران پر زور دیا کہ وہ سکولوں میں طلبا و طالبات اوراساتذہ کی حاضری کو یقینی بنائیں اور صوبائی حکومت کی طرف سے مقرر کردہ اہداف کے حصول پر پوری توجہ دیں –

انہوں نے کہا کہ صرف بچوں کا داخلہ کرا لینا ہی کافی نہیں بلکہ والدین کو قائل بھی کیا جائے کہ وہ بچوں کو باقاعدگی سے سکول بھی بھیجیں –

اجلاس میں ڈائریکٹر سکینڈری ایجوکیشن سجاد اسلم نے بتایا کہ ساہیوال ڈویڑن میں سرکاری سکولوں کی کل تعداد 3424 ہے جن میں طلبہ کے سکول 1738اور طالبات کے 1686ہیں، ان میں 527تعلیمی ادارے ہائی اور ہائرسکینڈری تعلیم فراہم کر رہے ہیں –

کمشنر نے سکولوں میں صفائی کی عمومی صورتحال خصوصا ٹائلٹس کی صفائی پر خصوصی توجہ دینے اور بچوں کو صفائی سے متعلق شعور اجاگر کرنے کی ضرورت پربھی زور دیا اور ہدایت کی کہ ساہیوال ڈویڑن کی دوبارہ سابقہ رینکنگ کے حصول کے لئے سخت محنت کی جائے –

Saad

https://sahiwalnews.com.pk

سعد رمضان ہمیں ساہیوال و گردونواح کی خبروں سے اپڈیٹ رکھتے ہیں۔

مزید پڑھیے

Leave a Reply

آپ کا ای میل ایڈریس شائع نہیں کیا جائے گا۔ ضروری خانوں کو * سے نشان زد کیا گیا ہے