کامسیٹس یونیورسٹی کی جانب سے ڈیجیٹل ساہیوال سیمینار کا انعقاد

 کامسیٹس یونیورسٹی کی جانب سے ڈیجیٹل ساہیوال سیمینار کا انعقاد

ساہیوال (ساہیوال نیوز – 14 فروری 2020 – عقیل اشفاق) پاکستان کا نوجوان ٹیلنٹ سے بھرپور ہے جو انٹرنیٹ کے ذریعے بین الاقوامی مارکیٹ میں اپنے ہنر کو فروخت کر کے اپنی معاشی حالت بہتر بنا سکتا ہے۔

یہ بات کمشنر ساہیوال محمد احسن وحید نے ای روزگار پروگرام اور کامسیٹس یونیورسٹی اسلام آباد، ساہیوال کیمپس کی جانب سے "ڈیجیٹل ساہیوال” کے نام سے سیمینار سے خطاب کرتے ہوئے کہی۔

سیمینار کا مقصد ساہیوال کی نوجوانوں کو پنجاب انفارمیشن اینڈ ٹیکنالوجی بورڈ کے پروگرام ای روزگار سے متعارف کروانا تھا۔ سیمینار میں ای روزگار سنٹر سے تعلیم حاصل کر کے آمدن حاصل کرنے والے طلبا و طالبات نے شرکا سے بات کی۔

تقریب کے مہمانِ خصوصی کمشنر ساہیوال محمد احسن وحید جبکہ مہمانِ اعزاز کامسیٹس یونیورسٹی اسلام آباد، ساہیوال کیمپس کے ڈائریکٹر پروفیسر ڈاکٹر سلیم فاروق شوکت تھے۔

کمشنر ساہیوال محمد احسن وحید نے کہا کہ انہیں ای روزگار سنٹر کے کامیاب نوجوانوں کی باتیں سن کر حوصلہ حاصل ہوا ہے کہ ہمارے نوجوان درست سمت کی جانب گامزن ہیں۔ انہوں نے کہا کہ موجودہ حکومت کی ترجیحات میں نوجوان نسل کی تربیت اور انہیں درست سمت فراہم کرنا ہے اور ان ویژن کی تکمیل میں ای روزگار سنٹر جیسے پروگرام معاون ثابت ہو سکتے ہیں۔

انہوں نے پنجاب آئی ٹی بورڈ کے پروگرام ای روزگار سنٹر کی تعاریف کی۔ پروفیسر ڈاکٹر سلیم فاروق شوکت نے کہا کہ یہ وقت کی ضرورت ہے کہ ہم اپنی نوجوان نسل پر خصوصی توجہ دیں اور انہیں اپنے کاروبار کرنے میں مدد فراہم کریں، تاکہ وہ نوکریاں تلاش کرنے کی بجائے نوکریاں دینے والے بنیں۔ انہوں نے کہا کہ اس مقصد کے حصول کے لیے انٹرنیٹ پر اپنی صلاحیتوں کو بروئے کار لاتے ہوئے نوجوان ناصرف اپنا بلکہ ملک و قوم کا فائدہ کر سکتے ہیں۔

تقریب میں سینئر پروگرام مینجر احمد اسلام سیان، مینجر ٹریننگ اینڈ پراجیکٹ اویلوایشن حیدر علی، اسسٹنٹ پروگرام مینجر پبلک ریلیشن حسن مرزا، اسسٹنٹ پروگرام مینجر اعجاز فاروق، لیب مینجر محمد اصغر اور ای روزگار سنٹر کے ٹریننرز کے علاوہ ساہیوال کی تمام یونیورسٹیز اور کالجز کے طلبا و طالبات نے شرکت کی۔ تقریب کے آخر میں کمشنر ساہیوال نے شرکا میں شیلڈز تقسیم کیں۔

Saad

https://sahiwalnews.com.pk

سعد رمضان ہمیں ساہیوال و گردونواح کی خبروں سے اپڈیٹ رکھتے ہیں۔

مزید پڑھیے

Leave a Reply

آپ کا ای میل ایڈریس شائع نہیں کیا جائے گا۔ ضروری خانوں کو * سے نشان زد کیا گیا ہے