سانحہ ساہیوال: ابتدائی رپورٹ پیش، جے آئی ٹی سربراہ وزیر اعلیٰ کو مطمئن نہ کرسکے

 سانحہ ساہیوال: ابتدائی رپورٹ پیش، جے آئی ٹی سربراہ وزیر اعلیٰ کو مطمئن نہ کرسکے

ساہیوال نیوز: سانحہ ساہیوال کی تحقیقات کے لیے قائم جے آئی ٹی نے اپنی ابتدائی رپورٹ وزیر اعلی پنجاب عثمان بزدار کو پیش کردی ہے تاہم وزیر اعلیٰ پنجاب سردار عثمان بزدار مشترکہ تحقیقاتی ٹیم کی تحقیقات سے مطمئن نہیں ہیں۔

تفصیلات کے مطابق سانحہ ساہیوال کی جے آئی ٹی رپورٹ کے سلسلے میں سردار عثمان بزدار کی زیرصدارت ایوان وزیراعلیٰ میں اجلاس جاری ہے جس میں سینئر صوبائی وزیر عبدالعلیم خان، وزیرقانون پنجاب راجہ بشارت ، چیف سیکرٹری اور آئی جی پنجاب شریک ہیں، ہوم ڈیپارٹمنٹ اور انٹیلی جنس ایجنسیوں کے حکام بھی اجلاس میں موجود ہیں۔

نجی ٹی وی نے ذرائع کے حوالے سے دعویٰ کیا ہے کہ سانحہ ساہیوال کی جے آئی ٹی کے سربراہ ایڈیشنل آئی جی اعجاز شاہ کی جانب سے ابتدائی رپورٹ پیش کردی گئی ہے۔ اجلاس کے دوران جے آئی ٹی سربراہ وزیر اعلیٰ پنجاب کو مطمئن نہ کرسکے جس پر وزیر اعلیٰ سردار عثمان بزدار نے سخت اظہار برہمی کرتے ہوئے کہا کہ کیا انکوائری کو سنجیدگی سے نہ لینا مناسب رویہ ہے؟

اجلاس میں کہا گیا کہ اصل ملزمان کو بچا کر نچلے عملے کو پھنسایا جارہا ہے۔ ذرائع نے بتایا کہ جے آئی ٹی اصل ذمہ داروں کا سراغ لگانے میں ناکام رہی ہے۔ اجلاس میں سی ٹی ڈی کے سربراہ اور ایس ایس پی آپریشن کی تبدیلی کا امکان ہے۔

Saad

https://sahiwalnews.com.pk

سعد رمضان ہمیں ساہیوال و گردونواح کی خبروں سے اپڈیٹ رکھتے ہیں۔

مزید پڑھیے

Leave a Reply

آپ کا ای میل ایڈریس شائع نہیں کیا جائے گا۔ ضروری خانوں کو * سے نشان زد کیا گیا ہے