میرے پاس تم ہو، آخری قسط سینما میں دکھائی جائے گی

 میرے پاس تم ہو، آخری قسط سینما میں دکھائی جائے گی

ڈرامہ سیریل میرے پاس تم ہو کی آخری قسط کا ناظرین کو شدت سے انتظار تھا۔ لیکن یہ سن کر سب کو انتہائی افسوس ہوا کہ یہ آخری قسط تاخیر کا شکار ہو گئی ہے۔ اور اس کی جگہ ایک سپیشل شو دکھایا گیا جس میں ڈرامہ کی پوری کاسٹ نے شرکت کی۔

میرے پاس تم ہو کی شہرت کو مدنظر رکھتے ہوئے اس ڈرامے کے پروڈیوسرزنے یہ فیصلہ کیا ہے کہ یہ آخری قسط اب پچیس جنوری کواے آر وائی ڈیجیٹل کے ساتھ ساتھ ملک بھر کے سینماز میں بھی لگائی جائَے گی۔ یہی وجہ ہے کہ سینما کے ٹکٹس لینے کے لیے لوگوں کو کچھ اور وقت دیا گیا ہے۔

خبر یہ بھی ہے کہ میرے پاس تم ہو کے پروڈیوسر جو کہ ہمایوں سعید ہیں ، یہ بھی کوشش کر رہے ہیں کہ یہ آخری قسط صرف پاکستان کے سینماز میں نہیں بلکہ امریکہ کے سینماز میں بھی دکھائی جائے۔

پاکستان کے بڑے شہروں کے سینماز میں میرے پاس تم ہو کی آخری قسط صرف آٹھ بجے ہی نہیں دکھاَئی جائے گی، بلکہ اس کا ایک اور شو رات دس بجے بھی دکھایا جائَے گا۔ اس آخری قسط کو دیکھنے کے لیے لوگ اتنے بے تاب ہیں کہ ابھی سے ٹکٹس کی ریکارڈ فروخت شروع ہو گئِی ہے۔

اس کے علاوہ پروڈیوسر ہمایوں سعید کے مطابق اس ڈرامے کا ایک ایسا سین بھی ہے جو کہ حال ہی میں فلمایا گیا ہے۔ یہی وجہ ہے کہ اس ڈرامے کی آخری قسط اٹھارہ جنوری کو نہیں بلکہ پچیس جنوری کو دکھائی جائے گی۔

یہ آخری قسط ساٹھ سے پینسٹھ منٹ کی ہوگی۔ میرے پاس تم ہو کے رائٹر خلیل الرحمن نے ایسا بھی کہا ہے کہ کمزور دل مرد آخری قسط دیکھنے سے پہلے اپنی میڈیسن ساتھ رکھ لیں۔

ان کا یہ بھی کہنا تھا کہ ان کی یہ ہدایت مردوں کے لیے ہے، عورتوں کے لیے نہیں۔ آخر اس آخری قسط میں ایسا کیا ہونے والا ہے۔

اس ڈرامہ میں کام کرنے والے مختلف کرداروں سے جب ڈرامہ کے اختتام کے بارے میں کوئی پیشگوئی کرنے کو کہا گیا تو ان کی رائے مختلف تھی۔ ظاہر ہے اگر وہ یہ بتا دیں گے تو ڈرامہ کا کلائیمکس ختم ہو جائے گا۔

مہوش کا کہنا تھا کہ ان کے خیال میں ڈرامہ کا اینڈ ہیپی ہونا چاہیے۔ اس کے خیال میں اس کو بے وفائی کی کافی سزا مل چکی ہے۔ دوسرے اداکاروں کے خیال میں دانش کو اب آگے بڑھ جانا چاہیے اور ماضی کو پیچھے چھوڑ جانا چاہیے۔

Saad

https://sahiwalnews.com.pk

سعد رمضان ہمیں ساہیوال و گردونواح کی خبروں سے اپڈیٹ رکھتے ہیں۔

مزید پڑھیے

Leave a Reply

آپ کا ای میل ایڈریس شائع نہیں کیا جائے گا۔ ضروری خانوں کو * سے نشان زد کیا گیا ہے